Official Website

پنجاب کا بجٹ چیلنج بن گیا، گورنر نے ایوان اقبال، سپیکر نے اسمبلی ہال میں اجلاس بلا لیا

36

لاہور : پنجاب میں بجٹ پیش کرنا چیلنج بن گیا، گورنر نے بجٹ اجلاس ایوان اقبال میں 2 بجے طلب کرلیا، جبکہ سپیکر پرویز الہی نے اجلاس ایک بجے اسمبلی ہال میں بلا لیا۔

دو روز سے پنجاب حکومت اسمبلی میں آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش نہیں کرسکی، گورنر پنجاب نے بجٹ اجلاس ایوان اقبال میں طلب کرلیا جبکہ اسپیکر کے مطابق اجلاس اسمبلی ہال میں ہی ہو گا۔ گزشتہ روز گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے پنجاب اسمبلی کا 40 واں اجلاس برخاست کر دیا تھا جبکہ اسمبلی کا 41 واں اجلاس آج دوپہر 2 بجے ایوان اقبال طلب کر رکھا ہے۔

دوسری جانب سپیکر چودھری پرویز الہی کا کہنا ہے کہ گورنر کا سیشن برخاست کرنے کا اختیار ختم ہوچکا،اجلاس کی کارروائی ایک بجے اسمبلی ہال میں ہی ہوگی۔ انہوں نے کہا ہے اسپیکر کے ہوتے ہوئے ڈپٹی اسپیکر کارروائی نہیں چلا سکتا، اجلاس بلانے کا طریقہ کار طے ہے، سیشن بلانے کیلئے گورنر سیکرٹری اسمبلی کو لکھے گا، انہوں نے پہلے غلط الیکشن کرایا آج دوسرا بد نما داغ اپنے ماتھے پر لگا لیا۔

سابق وزیر قانون اور پی ٹی آئی رہنما راجہ بشارت کا کہنا تھا حکومت کو غیرآئینی اقدام نہیں اٹھانے دیں گے، سبطین خان اور میاں اسلم اقبال نے کہا کسی اور عمارت میں اجلاس بلایا نہیں جاسکتا۔

ادھر صوبائی وزیر اور ن لیگی رہنما عطا تارڑ نے کہا ہے کہ گورنر نے آئینی ذمہ داری نبھاتے ہوئے اجلاس طلب کیا، اپوزیشن کو عوام کی پرواہ نہیں۔اویس لغاری کا کہنا تھا آئین پانی کی طرح ہوتا ہے، اپنا راستہ خود نکالتا ہے، ہم عوام کو جوابدہ ہیں۔