Official Website

امریکا نے ایرانی پیٹرولیم مصنوعات سے متعلق چین اور اماراتی کمپنیوں پر پابندی لگادی

49

امریکا نے مشرقی ایشیا کو ایرانی پیٹرولیم، پیٹروکیمیکل مصنوعات فراہم  اور فروخت کرنے میں مدد کے الزام میں ایران ، چین، ہانگ کانگ اور متحدہ عرب امارات سمیت دیگر ملکوں کی کمپنیوں کے نیٹ ورک پر پابندیاں عائد کر دیں۔

برطانوی خبررساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق امریکا نے بدھ کے روز ایران، ہانگ کانگ، متحدہ عرب امارات ،چین،ویتنام اور سنگاپور کی کمپنیوں پر مشتمل نیٹ ورک پر مشرقی ایشیا کو ایرانی پیٹرولیم اور پیٹروکیمیکل مصنوعات فراہم اور فروخت کرنے میں مدد کے الزام لگاتے ہوئے پابندیاں لگادیں۔

اطلاعات کے مطابق پابندیوں سے امریکا میں ان ملکوں کی کمپنیوں کے اثاثے منجمد ہو جائیں گے جبکہ  امریکی شہریوں کو ان کے ساتھ کاروبار کرنے سے روک دیا جائے گا۔

رپورٹس کے مطابق اس اقدام سے ایران پر دباؤ ڈالا جارہا ہے کیونکہ امریکا 2015 کے ایران جوہری معاہدے کو بحال کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

امریکی محکمہ خزانہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ  اس نیٹ ورک نے خلیجی ممالک میں قائم کمپنیوں کو ایرانی کمپنیوں سے مشرقی ایشیا میں لاکھوں ڈالر کی پیٹرولیم مصنوعات کی ترسیل اور فروخت میں سہولت فراہم کرنے کے لیے استعمال کیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم ایرانی پیٹرولیم اور پیٹرو کیمیکلز کی فروخت پر پابندیوں کے نفاذ کے لیے اپنے تمام طریقوں کا استعمال جاری رکھیں گے۔

واضح رہے کہ امریکا کی جانب سے بدھ کے روز لگائی جانے والی پابندیوں میں ایران میں قائم جام پیٹرو کیمیکل کمپنی بھی شامل ہے، جس پر واشنگٹن نے مشرقی ایشیا میں کمپنیوں کو پیٹرو کیمیکل مصنوعات برآمد کرنے کا الزام لگایا تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے قطر کے دارالحکومت دوحہ میں یورپی یونین کی وساطت سے ایران اور امریکا کے درمیان ہونے والے 2 روزہ بالواسطہ مذاکرات بغیر کسی نتیجے پر پہنچے ختم ہوئے تھے۔