Official Website

اینٹی کرپشن نے شیخ رشید کو کلین چٹ دے دی

18

لاہور: اینٹی کرپشن نے شیخ رشید کی حد تک الزام ثابت نہ ہونے کا بیان دے دیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں شیخ رشید کی اینٹی کرپشن لاہور میں طلبی کے نوٹس کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی۔ سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید ہائیکورٹ میں پیش ہوئے۔

اسسٹنٹ ڈائریکٹر اینٹی کرپشن نازیہ حسین عدالت میں پیش ہوئیں اور شیخ رشید کی حد تک الزام ثابت نہ ہونے کا بیان دے دیا۔ وکیل اینٹی کرپشن نے کہا کہ شیخ رشید کی حد تک الزام ثابت نہیں ہوا۔ وکیل شیخ رشید نے کہا کہ اینٹی کرپشن کے بیان کی روشنی میں اب ہماری درخواست غیر موثر ہو گئی ہے۔

عدالت نے شیخ رشید کی درخواست اینٹی کرپشن کے بیان کی روشنی میں نمٹا دی۔

شیخ رشید احمد نے درخواست میں چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری ہوم، ڈی جی اینٹی کرپشن سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے کہا تھا کہ ابھی تک رقبہ مکمل فروخت نہیں ہوا، ابھی 80 فیصد رقم وصول کرنا باقی ہے، ساری زمین کا قبضہ میرے پاس ہے، رائل ریذیڈینشیا والا رقم بھی نہیں دے رہا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ضلع اٹک میں 149 کنال کے رقبے کا 67 کروڑ میں رائل ریذیڈینشیا کیساتھ کا معاہدہ کیا تھا، رائل ریذیڈینشیا سے 10 کروڑ روپے ایڈوانس وصول کئے، 57 کروڑ کی ادائیگی 23 فروری 2022 تک مکمل ہوئی، زمین کی فروخت کا معاہدہ کسی بھی طرح غیر قانونی نہیں تھا، اینٹی کرپشن نے غیر قانونی طور پر انکوائری شروع کی، اینٹی کرپشن میں کل 15 جولائی کی طلبی کا نوٹس غیر قانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے۔