Official Website

ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم 96 سال کی عمر میں دنیا سے رخصت ہوگئیں

15

ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم 96 سال کی عمر میں دنیا سے رخصت ہوگئیں۔

برطانیہ پر سب سے طویل عرصے تک حکمرانی کرنے والی ملکہ الزبتھ دوم 96 برس کی عمر میں انتقال کرگئیں۔ انہوں نے 70 سال تک برطانیہ پر حکمرانی کی۔

جمعرات کو ڈاکٹروں کی جانب سے ان کی صحت کے حوالے سے تشویش ظاہر کیے جانے کے بعد ملکہ کا خاندان اسکاٹ لینڈ میں ان کی رہائش گاہ پر جمع ہوا تھا۔

برطانوی شاہی محل بکنگھم پیلس سے جاری ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ ڈاکٹروں کو ملکہ الزبتھ کی طبیعت سے متعلق تشویش ہے اور انہیں ڈاکٹروں کی نگرانی میں رہنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

تاہم اب برطانوی میڈیا کے مطابق شاہی محل بکنگھم پیلس نے ملکہ برطانیہ کے انتقال کا اعلان کردیا ہے۔

ملکہ کے انتقال کے بعد شہزادہ چارلس برطانیہ کے آئندہ بادشاہ بن جائیں گے۔برطانوی حکومت نے ملکہ برطانیہ کے انتقال پر 10 روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے۔

برطانوی میڈیا کے مطابق ملکہ کی تدفین لندن برج آپریشن کے منصوبے کے تحت سر انجام پائے گی،ملکہ کے تابوت کو شاہی ٹرین پر سینٹ پینکراس ریلوے اسٹیشن لندن منتقل کیاجائے گا اور پھر ریلوے اسٹیشن سے تابوت بکنگھم پیلس لایا جائے گا۔

رپورٹس کے مطابق ملکہ کی آخری رسومات دس روز بعد ویسٹ منسٹرا بے پر ادا کی جائیں گی اور ملکہ کی آخری رسومات کے وقت دو منٹ خاموشی اختیار کی جائے گی اور پھر ملکہ کو کنگ جارج ششم میموریل چیپل ونڈزر میں سپردخاک کیا جائے گا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق ملکہ کی آخری رسومات کے روز قومی تعطیل ہوگی۔ملکہ کو سپرد خا ک کیے جانے کے دن لندن اسٹاک،بینک اور تمام اہم ادارے بند رہیں گے۔

ملکہ الزبتھ دوم کی زندگی پر ایک نظر
ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم 21 اپریل 1926 کو لندن میں پیدا ہوئیں، وہ برطانوی بادشاہ جارج پنجم کے دوسرے بیٹے جارج ششم کی بیٹی تھیں، وہ 1945 میں فوجی خدمات انجام دینے والی شاہی خاندان کی پہلی خاتون بنیں۔

فوٹو: بی بی سی
فوٹو: بی بی سی
ملکہ الزبتھ دوم اپنے والد کے فروری 1952 میں انتقال کے بعد ملکہ بن گئی تھیں مگر ان کی باضابطہ تاج پوشی 2 جون 1952 کو ہوئی۔

ملکہ 600 سے زائد چیرٹیز کی سر پرست اور 54 ممالک کی دولت مشترکہ کی بھی سربراہ تھیں۔ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم کا دور 70 برس رہا، وہ دنیا کی سب سے عمر رسیدہ سربراہ مملکت تھیں۔

ملکہ الزبتھ نے دوبار 1961 اور 1997 میں پاکستان کا دورہ کیا، انہوں نے 1996 میں چین کا سرکاری دورہ کیا یہ برطانوی شاہی حکمران کا چین کا پہلا دورہ تھا۔

ملکہ کے پسماندگان میں ان کے 4 بچے، آٹھ پوتے اور 12 پڑ پوتے ہیں۔

ملکہ برطانیہ کے 70 سالہ دور میں 15 وزرائے اعظم تبدیل ہوئے
ملکہ برطانیہ کے دور میں 15 وزرائے اعظم تبدیل ہوئے، ان کے دور کے پہلے وزیر اعظم ونسٹن چرچل دوسرے اینتھونی ایڈن،تیسرے ہیرلڈمیکملن، ایلک ڈگلس ہوم چوتھے، ہیرلڈ ولسن پانچویں ،ایڈورڈ ہیتھ چھٹے ، جیمز کیلگن ساتویں، مارگریٹ تھیچر ملکہ کے دور کی آٹھویں، جان میجر نویں، ٹونی بلیئر ملکہ کے دور کے دسویں وزیراعظم رہے۔

گورڈن براؤن گیارویں ،ڈیوڈ کیمرون بارویں ،ٹریزامے تیرویں اور بورس جانسن چودھویں وزیراعظم رہے۔لزٹرس پندرویں وزیراعظم ہیں جنہیں ملکہ نےحکومت بنانےکی دعوت دی۔

لز ٹرس نے دو دن پہلے حکومت بنانے کیلئے ملکہ برطانیہ سے ملاقات کی تھی۔