Official Website

پیر نور الحق قادری کی زیر صدارت مینارٹی ڈویلپمنٹ کمیٹی نے ترقیاتی سکیموں کیلئے 53 ملین روپے مختص کر دیے

18

اقلیتی ارکان پارلیمنٹ کی تجویز کردہ 21 مختلف ترقیاتی سکیمیں منظور کی گئیں: وفاقی وزیر مذہبی امور
وزارتِ مذہبی امور میں منعقدہ مینارٹی ڈویلپمنٹ کمیٹی اجلاس میں اقلیتی ارکان پارلیمنٹ کی تجویز کردہ 21 مختلف ترقیاتی سکیمیں منظور کر لیں گئیں۔ تفصیلات کے مطابق کل جمعہ کے روز وزارتِ مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی میں وفاقی وزیر پیر نور الحق قادری کی زیر صدارت مینارٹی ڈویلپمنٹ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں سیکرٹری مذہبی امورسردار اعجاز خان جعفر، بین المذاہب ہم آہنگی ونگ کے سربراہ ارشد فرید خان کے علاوہ چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ، چیف پلاننگ ڈویژن ، فنانشل ایڈوایئزر فنانس ڈویژن اور پاک پی ڈبلیو ڈی کے نمائندے شامل تھے۔ اجلاس میں اقلیتی ارکان پارلیمنٹ کی تجویز کردہ 21 مختلف ترقیاتی سکیمیں منظور کی گئیں۔ عبادتگاہوں اور متروکہ املاک کی مرمت و دیکھ بھال اور چھوٹی ویلفیئر سکیموں کیلئے قریباً 53 ملین روپے مختص کیے گئے۔ وزیر مذہبی امور کا کہنا تھا کہ موجودہ ترقیاتی بجٹ بڑھانے کی کوشش کر رہے ہیں، غیر مسلم ارکانِ پارلیمنٹ کا بجٹ دگنا کیاجائے گا۔ گذشتہ 15 سال کی ترقیاتی سکیموں کے تجویز کنندہ اور لاگت کا مکمل ریکارڈ کمپوٹرائزڈ کیا جائے گا۔ سیکرٹری مذہبی امور نے کہا کہ وزارت اور پاک پی ڈبلیو ڈی کی مشترکہ ٹیم ترقیاتی کام کے آغاز اور تکمیل پر تصاویر کا مکمل ریکارڈ رکھتی ہے۔ منصوبہ کی تکمیل پر اطمینان حاصل کرنے کے بعد 10 فیصد بقایا ادائیگی کی جاتی ہے ۔ واضح رہے کہ اقلیتی ویلفیئر فنڈ سے پرانی عبادتگاہوں کی چاردیواری، واش رومز، شیڈز کی مرمت کی جائے گی۔ ساتھ ہی ساتھ عبادتگاہوں کیلئے جنریٹرز، کرسیاں، ساونڈ سسٹم ، غیر مسلم خواتین اور طلباء کیلئے سلائی مشینیں، لیپ ٹاپ فراہم کئے جائیں گے۔ #