Official Website

طالبان نے کابل کی نہر میں 3 ہزارلیٹر شراب تلف کردی

36

کابل:
طالبان کی انٹیلی جنس ایجنسی کی ٹیم نے کریک ڈاؤن کے دوران ضبط کی گئی 3 ہزارلیٹر شراب کابل کی نہر میں تلف کردی۔

غیرملکی خبررساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق افغان جاسوسی ایجنسی نے بتایا کہ حکام نے شراب کی فروخت کے خلاف کریک ڈاؤن کیا اور بڑے پیمانے پر شراب برآمد کرلی۔

جنرل ڈائریکٹوریٹ آف انٹیلی جنس (جی ڈی آئی) کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو فوٹیج میں چھاپے کے دوران پکڑی جانے والی شراب کو نہر میں بہاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پوسٹ کی گئی فوٹیج میں ایک انٹیلی جنس اہلکار نے کہا کہ مسلمانوں کو شراب بنانے اور اس کی فراہمی سے سنجیدگی سے پرہیز کرنا چاہیے۔

یہ واضح نہیں ہوسکا کہ چھاپہ کب مارا گیا یا شراب کو کب تلف کیا گیا لیکن ایجنسی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ کارروائی کے دوران 3 ڈیلرز کو گرفتار کیا گیا۔

سابق صدر اشرف غنی کے دور میں بھی شراب کی فروخت اور استعمال پر پابندی لگا دی گئی تھی۔

15 اگست 2021 کو طالبان نے افغانستان کا کنٹرول حاصل کرلیا تھا جس کے بعد ملک بھر میں منشیات کے عادی افراد کے خلاف چھاپوں میں غیرمعمولی اضافہ ہوا ہے۔