Official Website

چیئرمین نیب کا پارلیمانی کمیٹیوں کے سامنے پیش ہونے کا فیصلہ

9

اسلام آباد:
قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے تمام پارلیمانی کمیٹیوں کے سامنے پیش ہونے کا فیصلہ کرلیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق نیب ترجمان کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ چیئرمین نیب تمام پارلیمانی کمیٹیوں میں پیش ہوں گے کیونکہ وہ معزز پارلیمنٹ کو انتہائی عزت اور احترام کی نظر سے دیکھتے ہیں۔

نیب ترجمان نے کہا کہ جسٹس (ر) جاوید اقبال پہلے بھی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے اور آئندہ جب بھی انہیں پی اے سی یا دیگر پارلیمانی کمیٹیاں طلب کریں گی تو وہ ضرور پیش ہوں گے۔

واضح رہے کہ 2 روز قبل وزیراعظم عمران خان نے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو کسی بھی قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت نہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔

جمعرات 6 جنوری کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے چیئرمین رانا تنویر حسین کی زیر صدارت پی اے سی کا ان کیمرہ اجلاس ہوا، جس میں چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو پیش ہونا تھا مگر وہ شریک نہیں ہوئے تھے۔

کمیٹی رکن نورعالم خان کا کہنا تھا کہ ان کیمرہ اجلاس چیئرمین نیب کے کہنے پر طلب کیا گیا تھا، اب اچانک نیب کی جانب سے لیٹر موصول ہوگیا کہ جس میں کہا گیا کہ وزیراعظم اور کابینہ نے جسٹس (ر) جاوید اقبال کو قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کی منظوری نہیں دی تھی۔