Official Website

خاتون کو اغوا اور ہراساں کرنے والے بھارتی اداکار نئی مشکل میں پھنس گئے

18

چینائی: خاتون کو اغوا اور ہراساں کرنے کے کیس میں نامزد بھارتی اداکار نئی مشکل میں پھنس گئے کیونکہ اُن کے خلاف پولیس نے تفتیشی افسران کو قتل کی کوشش کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق کیرالہ پولیس کی کرائم برانچ نے اتوار کے روز فلم ڈائریکٹر بالاچندر کمار کے دلیپ سے متعلق اعتراف اور آڈیوز سامنے آنے کے بعد مقامی انڈسٹری ملیالم کے اداکار دلیپ کے خلاف مقدمہ درج کیا۔

پولیس کے مطابق اداکار نے 2017 میں اپنے خلاف دائر خاتون کے اغوا اور جنسی ہراسانی کے مقدمے کی تفتیش کرنے والے پولیس افسر کو قتل کرنے کی منصوبہ سازی کی۔

حال ہی میں فلم ڈائریکٹر نے ایک ٹی وی پروگرام میں انکشاف کیا کہ دلیپ نے ہراساں کرنے کے واقعے کی ویڈیو دیکھی اور مرکزی ملزم سنیل کمار (جو فلم انڈسٹری میں ڈرائیور کے طور پر کام کرتے ہیں) سے قریبی مراسم بنائے۔

علاوہ ازیں دلیپ کے کچھ آڈیو کلپ بھی سامنے آئے، جن میں سے ایک میں وہ کسی کو انتظار کا مشورہ دیتے ہوئے کہہ رہے تھے کہ ’پانچوں تفتیشی افسران جلد نقصان پہنچنے والا ہے‘۔ ایک اور آڈیو میں اداکار نے مبینہ طور پر کہا کہ ’اگر ان تفتیشی افسران کو کوئی ٹرک والا ٹکر مار دے تو وہ ڈیڑھ کروڑ روپے کا انتظام کردیں گے‘۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ مقدمہ درج ہونے کے بعد ابتدائی تفتیش کی جائے گی جس کی روشنی میں دلیپ کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

دوسری جانب دلیپ نے اس معاملے پر تبصرہ کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ساری باتوں کا جواب عدالت میں دیں گے۔ واضح رہے کہ اداکار دلیپ کے خلاف ہراسانی اور اغوا کا مقدمہ کوچی کی خصوصی عدالت میں زیر سماعت ہے، جس کا ٹرائل اب آخری مراحل میں داخل ہوچکا ہے۔