Official Website

کراچی میں پولیس اہلکار کی ذہنی معذور لڑکی کے ساتھ مبینہ زیادتی

69

کراچی: شہر قائد کے جناح اسپتال کالونی میں 18 سالہ معذور لڑکی کو مبینہ طور پر پولیس اہلکار نے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

جناح اسپتال کالونی کی رہائش 18 سالہ ذہنی معذور لڑکی کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنانے والے پولیس اہلکار رانا مختیار نے خود کو ایس ایس بی انویسٹی گیشن ساؤتھ کے سامنے پیش کردیا۔

کراچی پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ پولیس اہلکار 18 سالہ لڑکی سے زیادتی کے مقدمے میں نامزد ملزم ہے، واقعے کی تمام پہلوؤں اور حقائق کی روشنی میں تفتیش کی جائے گی۔
پولیس ترجمان کے مطابق ایس ایس پی انویسٹیگیشن ساؤتھ واقعے کی تفتیش اور معاملے کی خود نگرانی کر رہے ہیں۔

دریں اثنا متاثرہ لڑکی سے زیادتی کے بعد اہل خانہ اور علاقہ مکینوں نے ایڈیشنل آئی جی کراچی کے دفتر کے باہر مظاہرہ بھی کیا، جس میں پاکستان تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی راجہ اظہر بھی شریک ہوئے اور ملزم کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا۔

گورنر سندھ کا نوٹس

بعد ازاں گورنر سندھ عمران اسماعیل نے جناح اسپتال کالونی میں لڑکی سے مبینہ زیادتی کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی کراچی سے تفصیلات اور پیشرفت رپورٹ طلب کی۔

مبینہ زیادتی میں پولیس اہلکار ملوث ہے جو کہ ایک اعلی پولیس افسر کا گن مین ہے۔ گورنر سندھ نے ملزم کو گرفتار کر کے قانونی اور محکمہ جاتی کارروائی یقینی بنانے کی ہدایت کی۔