Official Website

سیاسی اختلافات کا حل بات چیت میں ہے، مراد علی شاہ کا ایم کیو ایم سے رابطہ

103

کراچی  : وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور ایم کیو ایم کے رہنما امین الحق کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سیاسی اختلافات کا حل بات چیت اور سیاسی طریقے سے حل ہونے چاہئیں۔

ایک روز قبل ایم کیو ایم کی ریلی پر لاٹھی چارج کے واقعے کے بعد وزیراعلیٰ سندھ نے متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما امین الحق سے رابطہ کیا ہے۔

دونوں کے درمیان ہونے والی گفتگو میں مذکورہ واقعہ کو لسانیت کا رنگ نہ دینے پر اتفاق ہوا اوراس حوالے سے بیانات کی مذمت کی گئی جبکہ واقعہ میں کسی بھی جاں بحق ہونے سے متعلق پوسٹ مارٹم کرانے پر مشاورت ہوئی تاکہ موت کا جو بھی سبب ہو ان کو سامنے لایا جاسکے

ایم کیو ایم کے رہنماء امین الحق نے ٹنڈوالہیار واقعہ سے متعلق حکومتی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا اور دونوں کے درمیان آئندہ اس قسم کے صورتحال پیدا نہ کرنے پر بھی اتفاق ہوا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ایم کیو ایم رہنماء کو یقینی دہانی کرائی کہ ٹنڈوالہیار واقعہ کی انکوائری کروائی جائے گی جو بھی ملوث پایا گیا اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔

وزیراعلیٰ سندھ نے امین الحق کو نئے بلدیاتی قانون پر بات چیت کرنے کی پیشکش کی جس پر امین الحق نے کہا کہ پارٹی سے مشاورت کے بعد ہی وہ جواب دیں سکیں گے۔

گفتگو کے دوران وزیراعلیٰ سندھ نے واقعہ میں زخمی ہونے والے متحدہ کے ایم پی اے صداقت حسین سے ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے ان کی خیریت دریافت کی اور اس بات پر اتفاق ہوا کہ اس قسم کے واقعات کسی صورت نہیں ہونے چاہئیں جبکہ وزیراعلیٰ سندھ نے صداقت حسین کو کہا کہ گزشتہ روز ہی انھوں نے پولیس کو انھیں چھوڑنے کی ہدایات دے دی تھیں۔