Official Website

گھبرائے ہوئے لوگوں کو 20 سال بعد چوہدری شجاعت کی صحت کا خیال آگیا، وزیراعظم

36

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی والے گھبراتے نہیں کیوں کہ ان کی سخت تربیت کی ہے، جو گھبرائے ہوئے ہیں ان کو شجاعت حسین کی صحت کا خیال آگیا۔ 

اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی والے گھبرائے ہوئے نہیں، میں نے تحریک انصاف کی ٹریننگ کرائی ہوئی ہے، جو گھبرائے ہوئے ہیں انہیں اب چودھری شجاعت حسین کی صحت یاد آگئی، وہ 20، 20 سال بعد اپنے ایم این ایز کی فوتگیوں پر بھی جا رہے ہیں، چودھری خاندان پر پورا اعتماد ہے، مونس الہٰی کام کو جہاد سمجھ کر کر رہے ہیں، خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ چین 5 ہزار بڑے ڈیم بنا چکا ہے، لیکن ہمارے ملک میں ڈیمز نہیں بنے، لیکن بدقسمتی سے ہم نے ماضی میں زیادہ ڈیمز نہیں بنائے جس کی وجہ سے پاکستان کو بہت نقصان ہوا، اگر ہم نے ڈیمز بنائے ہوتے تو بجلی مہنگی نہ ہوتی، جب تیل مہنگا ہوتا ہے تو بجلی  پر بھی اثر ہوتا ہے، جب بجلی مہنگی ہوتی ہے تو سب کچھ مہنگا ہو جاتا ہے،  پن بجلی سے خرچہ بھی کم ہوتا ہے اور کائمنٹ چینج کا اثر بھی کم ہو جاتا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ہماری آبادی بڑھ رہی ہے اور وسائل کم  ہو رہے ہیں، طویل المدتی  منصوبوں کی قلت کے باعث آ ج مسائل کا سامنا ہے، ہم نے الیکشن کا سوچنے کے بجائے آگے چلنے کا سوچا ہے، ہم نے اب تک صرف 2 بڑے ڈیم بنائے، تھر اور بلوچستان میں بھی زمین پڑی ہے، بلوچستان اور پنجاب کی زمینیں ذرخیز ہیں لیکن پانی کی کمی کا سامنا ہے، پانی ذخیرہ کرنے کے لیے ہمیں ڈیمز کی ضرورت ہے، ڈیمز سے پانی کا  مسئلہ کم  ہوتا ہے، زمینوں کے لیے پانی تک رسائی ممکن ہوتی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کالاباغ ڈیم بہت اچھی سائیڈ پر ہے، کالا باغ پر سندھ حکومت کو قائل کرنا ہوگا،ہمارا دشمن  سندھ کے بھائیوں کو ورغلا نے کی کوشش کرتا ہے، سندھ کو مطمن کرنا ہوگا کہ کالا باغ ڈیم سے ان کو فائدہ ہوگا۔