Official Website

122 میل فی گھنٹہ کی رفتار والی ہواؤں نے لوگوں کو بھی گرادیا

36

برطانیہ میں 3 دہائیوں میں آنے والا بدترین سمندری طوفان یونس کارن وال کے ساحل سے ٹکرا گیا۔

رپورٹس کے مطابق طوفانی ہواؤں کے سبب کارن وال میں سیکڑوں افراد بجلی سے محروم ہوگئے اور ہزاروں افراد گھروں میں محصور ہیں۔

رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ طوفان کے ٹکرانے کے بعد 122 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں اور اس کے باعث کئی عمارتوں اور مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔

رپورٹس کے مطابق طوفانی ہواؤں کے باعث کئی مقامات پر درخت اور دیواریں گرنے کے واقعات پیش آئے جس میں ایک شخص جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے جبکہ متعدد گاڑیاں بھی متاثر ہوئی ہیں۔

اس کے علاوہ کئی پلوں کو بھی ٹریفک کیلئے بند کردیا گیا ہے جبکہ درجنوں فلائٹس بھی منسوخ کردی گئی ہیں۔

اس حوالے سے جنوبی لندن کے علاقے کروئڈن میں تیز ہواؤں کی وجہ سے لوگوں کے گرنے کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک شخص تیز ہواؤں کی وجہ سے بچنے کی کوشش کررہا ہے تاہم آخر میں وہ سڑک پر گر جاتا ہے جس کے بعد آس پاس موجود لوگ اسے اٹھانے کیلئے دوڑتے ہیں۔

اسی ویڈیو میں ایک اور شخص کو بھی تیز ہوا کی وجہ سے سڑک کے بیچوں بیچ گرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔