Official Website

سلامتی کونسل میں روس کی مستقل رکنیت خطرے میں پڑگئی

88

یوکرین پر حملے کے بعد  امریکا نے سلامتی کونسل میں روس کی مستقل رکنیت ختم کرنے کے طریقوں پرغور شروع کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مستقل اراکین کی رکنیت ختم کرنےکے لیے  یو این چارٹرمیں تبدیلیوں کی ضرورت ہے۔

اس حوالے سے امریکا کی نائب وزیرخارجہ وینڈی شرمین نے  اراکین کانگریس کوبریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ روس کی سلامتی کونسل کی رکنیت ختم کرنےکے امکان کی تحقیقات جاری ہیں ابھی اس بارے میں حتمی فیصلہ نہیں ہوا۔

دوسری جانب  یوکرین نے  اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ  جورکنیت سوویت یونین کوحاصل تھی، وہ روس کونہیں دی جانی چاہیے، روس کی رکنیت کوچیلنج کیاجاسکتاہے۔

ادھر برطانیہ کا کہنا ہے کہ  اقوام متحدہ میں روس کی حیثیت کس طرح کم کی جائے، بحث کےلیےتیارہیں۔

خیال رہے کہ  1945 میں امریکا، برطانیہ، فرانس، چین اورسوویت یونین کومستقل رکنیت دی گئی تھی، بعد ازاں 1991 میں سوویت یونین کےٹوٹنے پررکنیت روس کومنتقل کردی گئی تھی۔