Official Website

جنگ میں ٹرنگ پوائنٹ آنے سے ہماری فتح یقینی ہوگئی، یوکرینی صدر

31

کیف: یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے کہا ہے کہ روسی افواج کے دارالحکومت کا محاصرہ کرنے سے اب جنگ میں ٹرنگ پوائنٹ آگیا ہے جس سے ہم فتح کے مزید قریب آگئے۔

یوکرین کے صدر نے قوم سے پُرجوش خطاب میں کہا کہ یہ کہنا تو مشکل تو ہے کہ ہم اپنی سرزمین کو کتنے دن میں روسی فوج سے آزاد کر پائیں گے لیکن یہ دن اب بہت جلد آنے والا ہے۔

صدر ولادیمیر زیلنسکی نے مزید کہا کہ روسی افواج کے دارالحکومت کے محاصرے سے جنگ میں ٹرنگ پوائنٹ آگیا ہے جس سے ہم اپنے ہدف یعنی فتح کے نہایت قریب آگئے ہیں۔

یوکرین کے صدر نے اپنی جلد فتح کے دعوے سے متعلق زیادہ تفصیلات تو فراہم نہیں کیں تاہم روسی حملے کے بعد سے قوم کا حوصلہ بڑھانے کے لیے مسلسل خطابات کر رہے ہیں۔

روسی حملوں کے باعث یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی مسلسل اپنی جگہ تبدیل کر رہے ہیں۔ اُن پر پانچ بار قاتلانہ حملہ بھی کرنے کی کوشش کی گئی لیکن وہ ہر بار محفوظ رہے اور اب ممکنہ طور پر پولینڈٖ کی سرحد کے نزدیک کہیں مقیم ہیں۔

روس کے حملوں میں تیزی کے بعد سے امریکا نے بھی نئی پابندیاں عائد کردی ہیں جن میں روس کے ارب پتی تاجر اور صدر ولادیمیر پوٹن کے ترجمان کے قریبی رشتہ داروں پر پابندیاں بھی شامل ہیں۔

ادھر ترکی میں روس اور یوکرین کے وزرائے خارجہ کی ملاقات بھی بے نتیجہ اختتام پذیر ہوگئی جب کہ بیلاروس کی سرحد پر ہونے والے دونوں ممالک کے اعلیٰ حکام کے درمیان بات چیت کے تین ادوار بھی کامیابی سے ہمکنار نہیں ہوسکے۔